شیخ حمد کے خلاف مقدمہ قائم کرنے کے لئے بین الاقوامی عدالت کی موافقت

بحرین کی امن و صلح تحریک کے رکن نے اعلان کیا ہے کہ بین الاقوامی عدالت نے بحرین کے ظالم وجابر بادشاہ شیخ حمد بن عیسی آل خلیفہ کی جانب سے بحرینی عوام کے قتل عام کے خلاف مقدمہ قائم کرنے کے سلسلے میں موافقت کی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العالم کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بحرین کی امن و صلح تحریک کے رکن یاسر صایغ نے اعلان کیا ہے کہ بین الاقوامی عدالت نے بحرین کے ظالم وجابر بادشاہ شیخ حمد بن عیسی  آل خلیفہ کی جانب سے بحرینی عوام کے قتل عام کے خلاف مقدمہ قائم کرنے کی موافقت کی ہے۔ انھوں نے کہا کہ شیخ حمد بن عیسی آل خلیفہ مقدمہ کو روکنے کے لئے اپنے تمام ہتھکنڈے استعمال کریں گے شیخ حمد کے خلاف اپنے عوام کے خلاف جنگی جرائم کے ارتکاب کرنےکے سلسلے میں مقدمہ قائم کیا جائے گا یاسر صایغ نے کہا کہ حمد بن عیسی آل خلیفہ کی حکومت نے اب تک سنگين جرائم کا ارتکاب کیا ہے بحرینی حکومت نے دل کھول کر انسانی حقوق کو پامال کیا ہے آل خلیفہ حکومت نے سعودی عرب اور امارات کی افواج کو بلا کر اپنے عوام کا قتل عام کیاہے اور یہ تمام موارد جنگي جرائم کے زمرے میں آتے ہیں انھوں نے کہا کہ آل خلیفہ حکومت نے مسجدوں ، امام بارگاہوں اور مقدس مقامات کی بر حرمتی کی ہے کئی مسجدوں کو بحرینی حکومت نے شہید کردیا ہے سعودی فوجیوں نےقرآن مجید کی توہین اور بے حرمتی کی ہے انھوں نے کہا کہ حضرت زہرا سلام اللہ علیھا کی شہادت کے دن آل خلیفہ اور آل سعود بحرینی عوام کے قتل عام کا منصوبہ بنارہے ہیں یاسر صایغ نے کہا بحرینی عوام اپنے خون کے آخری قطرے تک اپنے حقوق اور مطالبات کا دفاع کریں گے۔ ادھر بحرین کے بعض سیاستدانوں نے حقوق انسانی کےعالمی اداروں پر آل خلیفہ اور آل سعود کے سنگين جرائم پر سکوت اختیار کرنے پر شدید تنقید کی ہے اور لیبیا ، بحرین اور یمن میں امریکہ کی متضاد پالیسی پر شدید نکتہ چینی کی ہے۔

News Code 1289377

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 3 =