آیت اللہ سیستانی نےسعودی  بادشاہ کی ٹیلیفون پرگفتگوکی درخواست رد کردی

عراق ممتازعالم دین اورشیعہ مرجع آیت اللہ سیستانی نے سعودی عرب کے بادشاہ کی ٹیلیفون پر گفتگو کی درخواست کو مسترد کردیا ہےآیت اللہ سیستانی نے اس سے قبل امریکہ کے سابق صدر جارج بش اور موجودہ صدر باراک اوبامہ کے ساتھ بھی گفتگو کرنے سے انکار کردیا تھا۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق قم میں آیت اللہ سیستانی کےنمائندے حجۃ الاسلام والمسلمین سید جواد شہرستانی نے بعض پارلیمانی نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب کے بادشاہ عبد اللہ  نے بحرین پر لشکر کشی کے بعد عراق کےممتاز عالم دین اورشیعہ مرجع آیت اللہ سیستانی کے ساتھ ٹیلیفون پر گفتگو کرنےکی درخواست کی تھی جسے آیت اللہ سیستانی نے مسترد کردیا کیونکہ آیت اللہ سیستانی کو یقین تھا کہ یہ درخواست بحرینی عوام کی حالت بہتر کرنے کے سلسلے میں نہیں ہے  انھوں نے کہا کہ بحرین  کے عوام کی دردناک حالت پر آیت اللہ سیستانی کو سخت  تشویش لاحق ہے کیونکہ آیت اللہ سیستانی ، آل خلیفہ اور آل سعود کے گہرے تعلقات سے اچھی طرح واقف  ہیں اور آیت اللہ سیستانی بحرینی عوام کوآل سعود اور آل خلیفہ کے نرغہ میں گرفتار نہیں دیکھنا چاہتے سید جواد شہرستانی نے کہا کہ  آیت اللہ سیستانی نے اس سے قبل امریکہ کے سابق صدر جارج بش اور موجودہ صدر باراک اوبامہ کے ساتھ بھی گفتگو کرنے سے انکار کیا تھا اور انھوں نے کسی بھی امریکی اہلکار کو اپنے حضور قبول نہیں کیا ہے۔

News Code 1289187

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 2 =