کراچی میں بد امنی اور بھتہ خوری کے خلاف تاجروں کی ہڑتال

پاکستان کے شہرکراچی میں تاجروں کی تنظیم کے اتحاد نے شہر میں بھتہ خوری اور بدامنی کے خلاف ہڑتال کی ہے جس کی وجہ سے شہر کی اکثر مارکیٹیں اور تجارتی مراکز بند ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائ‏ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے شہرکراچی میں تاجروں کی تنظیم کے اتحاد نے شہر میں مبینہ بھتہ خوری اور بدامنی کے خلاف ہڑتال کی ہے جس کی وجہ سے شہر کی اکثر مارکیٹیں اور تجارتی مراکز بندہیں۔ اس ہڑتال کی متحدہ قومی موومنٹ، جماعت اسلامی، سنی تحریک اور عوامی نیشنل پارٹی نے بھی حمایت کی ہے۔ اس سے قبل ہڑتال کے فیصلے پر تاجر برادری دو گروہوں میں تقسیم ہوگئی تھی، چیمبر نے ہڑتال کا فیصلہ واپس لے لیا تاہم چھوٹے تاجروں کی تنظیمیں اس فیصلے پر قائم رہیں۔کراچی چیمبر آف کامرس کے سابق صدر اور بزنس مین گروپ کے سربراہ سراج قاسم تیلی نے پیر کو ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ انہوں نے حکومت کو دس نکاتی ایجنڈہ پیش کردیا ہے کہ اگر بارہ اپریل تک مطالبات تسلیم نہ ہوئے تو پھر ایسی ہڑتال ہوگی کہ ہر چیز ہل جائیگی۔ انہوں نے واضح کیا کہ کراچی چیمبر کا کسی بھی سیاسی جماعت سے کوئی تعلق نہیں اور نہ ہی تاجروں کا کوئی سیاسی ایجنڈہ ہے۔ وہ صرف پر امن طریقے سے اپنا احتجاج رکارڈ کراناچاہتے ہیں۔

News Code 1282176

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 9 =