ڈیرہ غازی خان میں طالبان دہشت گردوں کے حملے میں 50 افراد جاں بحق

پاکستان کے صوبے پنجاب کے جنوبی ضلع ڈیرہ غازی خان میں ایک بزرگ پیر کے مزار پرطالبان دہشت گردوں کے خود کش حملوں میں کم از کم 50 افرادجاں بحق اور 100 سے زائد زخمی ہو گئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے صوبے پنجاب کے جنوبی ضلع ڈیرہ غازی خان میں ایک بزرگ پیر کے مزار پرطالبان دہشت گردوں کے خود کش حملوں میں کم از کم 50 افرادجاں بحق اور 100 سے زائد زخمی ہو گئے ہیں۔پولیس حکام کے مطابق کم از کم دو خودکش بمباروں نے موقع پر موجود بڑی تعداد میں عقیدت مندوں کے درمیان خود کو اڑا دیا۔ یہ حملہ کل عرس کے موقع پر کیا گیا۔

مقامی حکام کے مطابق حضرت سلطان سخی سرور کے مزار پر عرس کی تقریبات کے دوران دو زور دار دھماکے ہوئے جن میں پچاسسے زائد افراد ہلاک ہوئے ہیں۔بعض زخمیوں کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے ذرائع کے مطابق طالبان دہشت گردوں نے حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ سنیوں کی مزيد زیارتگاہوں پر حملے کریں گے طالبان وہابی نظریات کے حامل ہیں جو زیارتگاہوں پر عوامی حضور کو بدعت سمجھتے ہیں اور بزرگوں کے مزاروں ، زیارتگاہوں اور مسجدوں میں عوامی اجتماعات پر حملے کرکے عام بے گناہ افراد کو ہلاک کرتے ہیں سعودی عرب سمیت بعض خلیجی ممالک طالبان کو مدد فراہم کررہے ہیں۔

News Code 1281300

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 3 =