شام کے حوادث میں امریکہ، اردن اور برطانیہ کے خفیہ ادارے ملوث ہیں

لبنان کے تجزيہ نگار نے شام میں رونما ہونے والے حالیہ حوادث کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہر درعا کے مظاہروں کے پیچھے امریکہ، اردن اور برطانیہ کے خفیہ ادارے ملوث ہیں.

مہرخبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق لبنان کے تجزيہ نگار جوزف ابو فاضل نے لبنان کے ٹی وی این بی این کے ساتھ گفتگو میں شام میں رونما ہونے والے حوادث کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہر درعا کے مظاہروں کے پیچھے امریکہ، اردن اور برطانیہ کے خفیہ ادارے ملوث ہیں. اس نے کہا کہ شام میں مظاہرے سرحدی شہر درعا سے شروع ہوئے ہیں اوردرعا کے مظاہروں میںامریکہ، اردن اور برطانیہ کے خفیہ اداروں کا ہاتھ واضح ہے  شام کے صدر بشار اسد نے اپنے حالیہ خطاب میں کہا تھا کہ درعا شام کا قلب ہے اور درعا کے حوادث میں وہاں کے لوگ ملوث نہیں  بلکہ غیر ملکی عناصر ملوث تھے جو شام میں عدم استحکام پیدا کرنے کی کوشش کررہے تھے جسے شام کے عوام نے ناکام بنادیا ہے لبنانی تجزيہ نگار کے مطابق  اگر شام میں کوئی فتنہ برپا ہوتا ہے تو پھر پوراخطہ اس کی لپیٹ میں آجائے گا۔

News Code 1280590

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 8 =