پاکستان کے صدرزرداری نےذوالفقارعلی بھٹو ریفرنس دائر کردیا ہے

پاکستان کے سابق وزیرِ اعظم اور پیپلزپارٹی کے بانی ذوالفقار علی بھٹو کی سزائے موت کے عدالتی فیصلے کا دوبارہ جائزہ لینے کے لیے پاکستان کے صدر آصف علی زرداری نے سپریم کورٹ میں ریفرنس دائر کر دیا ہے پیپلز پارٹی نےذوالفقار علی بھٹو کی سزائے موتکو عدالتی قتل قراردیا تھاذوالفقار علی بھٹو پاکستان کے ڈکٹیٹر فوجی آمر جنرل ضیاء کے دباؤ میں پھانسی دی گئی تھی ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے سابق وزیرِ اعظم اور پیپلزپارٹی کے بانی ذوالفقار علی بھٹو کی سزائے موت کے عدالتی فیصلے کا دوبارہ جائزہ لینے کے لیے پاکستان کے صدر آصف علی زرداری نے سپریم کورٹ میں ریفرنس دائر کر دیا ہے پیپلز پارٹی نےذوالفقار علی بھٹو کی سزائے موتکو عدالتی قتل قراردیا تھاذوالفقار علی بھٹو پاکستان کے ڈکٹیٹر فوجی آمر جنرل ضیاء کے دباؤ میں پھانسی دی گئی تھی ۔ ملکی تاریخ میں یہ پہلی بار ہے کہ کسی منتخب صدر نے کسی اہم تاریخی مقدمے کا ازسرِ نو جائزہ لینے کے لیے سپریم کورٹ میں ریفرنس داخل کیا ہے۔اٹھارہ صفحات پر مشتمل یہ ریفرنس پاکستان کے سیکریڑی قانون مسعود چشتی نے عدالت میں جمع کروایا۔ریفرنس دائر کیے جانے سے پہلے پاکستان کے وزیر قانون بابر اعوان نے اسلام آباد میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ’یہ ریفرنس عدالتی نظام کو مضبوط کرنے، قانون کی سربلندی اور قانون کی حکمرانی کے لیے دائر کیا جا رہا ہے۔پاکستانی صدر کے ترجمان کے بیان کے مطابق موت کی سزا برقرار رکھنے والے سپریم کورٹ کے بینچ میں شامل ایک سابق جج نے بھی بعد میں سرِ عام یہ تسلیم کیا تھا کہ بھٹو کے خلاف منقسم عدالتی فیصلہ اس وقت کے فوجی آمر جنرل ضیاء الحق کے دباؤ میں دیا گیا تھا۔پاکستان کے وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی نے ایک نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سابق چیف جسٹس نسیم حسن شاہ نے بھی بعد میں یہ تسلیم کیا تھا کہ بھٹو کے خلاف موت کی سزا کا فیصلہ بھی دباؤ میں دیا گیا تھا۔

لاہور ہائی کورٹ نے قتل کے ایک مقدمے میں منتخب وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کے خلاف موت کی سزا سنائی تھی اور سپریم کورٹ نے مارچ سن نواسی کے اپنے منقسم فیصلے میں بھٹو کے خلاف موت کی سزا برقرار رکھی تھی۔

ذوالفقار علی بھٹو پاکستان کی تاریخ میں واحد منتخب وزیر اعظم تھے جن کو عدالت نے موت کی سزا سنائی تھی اور پیپلز پارٹی نے ہمیشہ اس کو عدالتی قتل قرار دیا۔پاکستان کےفوجی آمر جنرل ضیاء کے دباؤ میں ذوالفقار علی بھٹو کو چار اپریل سنہ نواسی کو پھانسی دی گئی تھی۔

News Code 1280527

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 12 =