پاکستان کے صوبہ پنجاب میں ہڑتالی ڈاکٹروں نے حکومتی الٹی میٹم کو مسترد کردیا ہے

پاکستان کے صوبہ پنجاب میں ینگ ڈاکٹر ہڑتال پر ہیں جنھیں پنجاب حکومت نے کہ24گھنٹے کے اندر ڈیوٹیوں پر واپس پہنچنے کا حکم دیا ہے لیکن ہڑتالی ڈاکٹروں نے حکومتی الٹی میٹم کو مسترد کردیا ہے.

مہرخبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے صوبہ پنجاب میں ینگ ڈاکٹر ہڑتال پر ہیں جنھیں پنجاب حکومت نے کہ24گھنٹے کے اندر ڈیوٹیوں پر واپس پہنچنے کا حکم دیا ہے لیکن ہڑتالی ڈاکٹروں نے حکومتی الٹی میٹم کو مسترد کردیا ہے.حکوت پنجاب کے ترجمان کے مطابق ہڑتال کے باعث پیش آنیوالی صورتحال سے نمنٹنے کیلئے متبادل انتطامات مکمل کر لئے گئے ہیں اور بے روزگار ڈاکٹروں کو ایڈ ہاک بنیاد پر تقرریوں کے لئے محکمہ صحت سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ دوسری جانب حکومتی الٹی میٹم کو ینگ ڈاکٹرز نے مسترد کردیا اوراعلان کیاہے کہ حکومت متبادل انتظامات کرلے ڈاکٹرآج استعفے پیش کریں گے۔گذشتہ رات پنجاب کابینہ کے اجلاس میں ڈاکٹرز کی خدمات کولازمی سروس قراردیتے ہوئے ہڑتالی ڈاکٹروں کوچوبیس گھنٹے میں ڈیوٹی پر آنے کاالٹی میٹم دیاگیاتھا اوریہ بھی فیصلہ ہواتھا کہ ہڑتالی ڈاکٹر واپس نہ آئے توریٹائرڈ اوربیروزگارڈاکٹروں کو کنٹریکٹ پر بھرتی کیاجائے گا۔آج ینگ ڈاکٹرز نے اپنی ہڑتال جاری رکھی اوراعلان کیاکہ حکومت نے مطالبات نہ مانے،گرفتاریاں کرلے ملازمت سے نکال دے کوئی ڈاکٹرڈیوٹی پر نہیں آئے گا۔ینگ ڈاکٹروں نے دعوی کیاہے کہ ڈاکٹروں کے گھروں میں چھاپے مارنے اورگرفتاریوں کاعمل شروع کردیاگیاہے۔ترجمان پنجاب حکومت کے مطابق کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کے لئے اسپتالوں کے باہر پولیس کی بھاری نفری تعینات کردی گئی ہے۔

News Code 1279914

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 1 =