بحرین میں امریکہ نواز الخلیفہ حکومت کے خلاف عوامی مظاہرے جاری

بحرین کی ظالم و جابر حکومت نے پرامن مظاہرین کو کچلنے کے لئے سعودی عرب اور امارات سے فوجی منگواکر پرامن مظاہرین کا سفاکی اور بےرحمی کے ساتھ قتل عام کیا، اور ملک میں ایمرجنسی نافذ کی لیکن اس کے باوجود عوامی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ریڈیو النور کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بحرین کی ظالم و جابر حکومت نے پرامن مظاہرین کو کچلنے کے لئے سعودی عرب اور امارات سے فوجی منگواکر اپنے ملک کے پرامن مظاہرین کا سفاکی اور بےرحمی کے ساتھ سعودی فوجیوں سے قتل عام کروایا، اور ملک میں ایمرجنسی نافذ کی لیکن اس کے باوجود عوامی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔ بحرین کے جوانوں نے اس ہفتہ کو ہفتہ استقامت قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ الخلیفہ کی ڈکٹیٹر حکومت کے خلاف مظاہرے جاری رہیں گے ادھر بحرین کی حکومت نے وسیع پیمانے پر گرفتایروں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے اور اب تک 400 سے زائد افراد گرفتار کئے جاچکے ہیں ذرائع کے مطابق سعودی فوجی گھروں میں گھس کر لوگوں کو پریشان کررہے ہیں انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں نے سعودی عرب کے فوجیوں کو بلوا کر اپنے عوا م کو قتل کرانے پر بحرین کے الخلیفہ بادشاہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے کیونکہ کوئی بھی حکومت غیر ملکی فوجیوں کو بلا کر اپنے عوا م کا قتل عام نہیں کرتی  ذرائع کے مطابق الخلیفہ خاندان اور آل سعود خاندان کا یہودیوں سے گہرا رابطہ ہے اور امریکہ میں بحرین کی خاتون سفیر ایک یہودی خاتون ہیں۔

News Code 1279338

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 9 =