جاپان نے زلزلہ سے متاثرہ چار جوہری ری ایکٹرز بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے

جاپان نے زلزلے سے متاثر ہونے والے چار جوہری ری ایکٹرز کو بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ جاپان نے زلزلے سے متاثر ہونے والے چار جوہری ری ایکٹرز کو بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔فوکوشیما جوہری تنصیب چلانے والی کمپنی ٹوکیو الیکٹرک پاور نےیہ اعلان حادثے کے تین ہفتے بعد کیا ہے کیونکہ ری ایکٹر کو قابو میں نہیں لایا جا سکا ہے۔علاقے میں تابکاری کی خطرناک سطح دیکھنے میں آئی ہے۔جاپان میں کابینہ کے چیف سکریٹری  کے مطابقماہرین اب فوکوشیما ڈائچی کے جوہری تنصیب کو ایک خاص قسم کے مواد سے ڈھانپنے پر غور کر رہے ہیں جو تابکاری کے پھیلنے سے روک سکے۔حکومت نے اب جوہری تنصیبات چلانے والے آپریٹر کو نئے حفاظتی اقدام پر عمل کرنے کا حکم دیا ہے۔ یہ اقدامات اپریل کے آخر تک مکمل ہوں گے۔جاپان میں زلزلے سے متاثر ہونے والےجوہری ری ایکٹر کے قریب سمندر کے پانی میں تابکار آیوڈین کی سطح اس وقت قانونی حد سے تقریباً ساڑھے تین ہزار گنا زیادہ ہے۔

جاپان کے جوہری تحفظ کے ادارے کے مطابق فوکوشیما جوہری پلانٹ کے ری ایکٹر نمبر ایک کے قریب سمندر کے پانی میں تباکار آیوڈین کی سطح محفوظ حد سے 3355 گنا زیادہ پائی گئی ہے۔ اس سے پہلے پانی کی چھان بین کے بعد اندازہ لگایا گیا تھا کہ یہ اس حد سے 1850 گنا ْریادہ تھی لیکن اب حکام کا کہنا ہے کہ یہ اس سے کہیں زیادہ ہے۔

News Code 1279254

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 3 =