آل سعودکا سلسلہ نسب آل یہود تک پہنچتا ہے// آل سعود آل یہود ہیں

آل سعود خاندان کی تاریخ کا مطالعہ کرنے سے یہ بات آفتاب عالمتاب کی طرح روشن ہوجاتی ہے کہ سعودی عرب پر حکمراں آل سعود خاندان کے آل یہود کے ساتھ گہرے اور قریبی روابط ہیں ۔

مہر خبررساں ایجنسی کی اردو سروس کی رپورٹ کے مطابق آل سعود کی تاریخ کا مطالعہ کرنے سے یہ بات آفتاب عالمتاب کی طرح روشن ہوجاتی ہے کہ سعودی عرب پر حکمراں آل سعود خاندان کے آل یہود کے ساتھ گہرے اور قریبی روابط رہے ہیں اور آل سعودکا سلسلہ نسب آل یہود تک پہنچتا ہے۔  کتاب تاریخ آل سعود کو 70 کی دہائی میں سعودی عرب کےمعروف تاریخ داں ناصر السعید نے تحریر کیا، ناصر السعید نے یہ کتاب آل سعود خاندان کے مالی تعاون سے شائع کی ،آخر کار اس معروف تاریخ داں کو آل سعود کے شرپسندوں نے قتل کردیا، ناصر السعید نے اپنی کتاب میں سعود خاندان کے ہر فرد کی مالی بدعنوانیوں  ، اخلاقی فساد اور انحراف کے بارے میں سیر حاصل بحث کی ہے اور اس کے ساتھ آل سعود کو واضح دلائل کے ساتھ آل یہود ثابت کیا ہے۔واضح رہے کہ اس کتاب کی تالیف کے وقت ملک فہد  بن عبد العزیز سعودی عرب کے بادشاہ تھے اور ناصر السعید نے سعودی عرب کے اس بادشاہ کی غیر اخلاقی حرکتوں ، عیاشیوں اور برائیوں کے بارے میں ٹھوس ثبوت پیش کئے ہیں۔ناصر السعید نے اپنی کتاب کے پہلے تیس صفحوں میں آل سعود کے شجرہ نامہ اور شجرہ نسب کے بارے میں تحریر کرتے ہوئے ثابت کیا ہے سعود خاندان کا سلسلہ نسب حجاز کے یہودیوں تک پہنچتا ہے۔ ناصر السعید نے یہودیوں کی طرف سے محمد بن عبد الوہاب کی بھر پور حمایت اور وہابیت کی بنیاد اور داغ بیل ڈالنےپر تفصیلی بحث کرتے ہوئے لکھا ہے کہ یہودیوں کی طرف سےدینی رہبری محمد بن عبد الوہاب کو سونپی گئی جبکہ سیاسی رہبری کو آل سعود کے حوالے کیا گيا۔ سعودی عرب کے اس تاریخ داں نے آل سعود کے تمام اقدامات کی تشریح کرتے ہوئے لکھا ہے کہ آل سعود نے عربستان کے قبائل کا بڑی بےدردی اور بے رحمی کے ساتھ قتل عام کیا اور اپنے اس مدعا کو ثابت کرنے کے لئے تصاویر کے ساتھ ٹھوس ثبوت پیش کئے ہیں۔ اس کتاب میں آل سعودخاندان اور انگریزوں کے قریبی روابط کا پردہ بھی فاش کیا گیا ہے۔

ناصر السعید نےاپنی کتاب میں آل سعود خاندان کےاسرائیل کے بانی بن گوریان کے ساتھ پوشیدہ اور مخفی روابط کی طرف اشارہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ غاصب اسرائیلی حکومت کی تشکیل میں آل سعود خاندان نے بنگوریان کو بہت بڑا تعاون پیش کیا اور اس تعاون کا سلسلہ آج تک جاری ہے۔

کتاب کی جلد پر آل سعود خاندان پر طنز کرتے ہوئے سورہ بقرہ کی آیت 204 اور 205 کا ترجمہ لکھا ہوا ہے؛ انسانوں میں ایسے لوگ بھی ہیں  جن کی باتیں زندگانی دنیا میں تم کو اچھی لگتی ہیں اور وہ اپنے دل کی باتوں  پر خداکو گواہ بناتے ہیں حالانکہ وہ بد ترین دشمن ہیں ، اور جب آپ کے پاس سے منہ پھیرتے اور چلے جاتے ہیں  تو زمین میں فساد برپا کرنے کی کوشش کرتے ہیں کھیتیوں اور انسانی نسلوں کو تباہ و برباد کرتے ہیں حالانکہ اللہ تعالی فساد کو پسند نہیں کرتا ہے۔

News Code 1277794

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 10 =