بحرین کےعوام کا قتل عام امریکہ کے لئےاہم نہیں// تیل اہم ہے

لندن میں انسانی حقوق کے ایک اہلکار اور مشرق وسطی کے امور کے ماہر نے علاقائی عوام کی تحریکوں کے بارے میں امریکہ کی منافقانہ اور متضاد پالیسی اور بحرین اور سعودی عرب کے فوجیوں کے ہاتھوں بحرین کے عوام کے سفاکانہ قتل عام پر امریکہ کی خاموشی کو امریکی فریب اور تیل کے حصول کی کوشش قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کے لئے انسانی جانوں سے تیل کہیں زيادہ اہم ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق لندن میں انسانی حقوق کے ایک اہلکار اور مشرق وسطی کے امور کے ماہرسامی رمضان  نے رشیا ٹو ڈے ٹی وی پروگرام میں علاقائی عوام کی تحریکوں کے بارے میں امریکہ کی منافقانہ اور متضاد پالیسی  اور بحرین و سعودی عرب کے فوجیوں کے ہاتھوں بحرین کے عوام کے بے رحمانہ قتل عام پر امریکہ کی خاموشی کو امریکی فریب اور تیل کے حصول کی کوشش قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کے لئے انسانی جانوں سے تیل کا حصول کہیں زيادہ اہم ہے۔ انھوں نے کہا کہ بحرین کی ظآلم وجابر حکومت 6 لاکھ افراد کے حقوق کو طاقت اور تشدد کے ذریعہ دبا رہی ہے اور امریکہ بحرین اور یمن میں جمہوریت اور ڈیموکریسی کی حمایت کیوں نہیں کررہا ہے۔ رمضان نےکہا کہ امریکہ اور مغربی ممالک علاقہ کے تیل کے ذخائر کو غارت کرنا چاہتے ہیں انھوں نے تیل کے لئے ایک دور میں علاقہ کے تمام ڈیکٹیٹروں کو جدید ترین ہتھیاروں سے مسلح کیا اور اب خود ان کو ٹاہاک میزائلوں سے نشانہ بنارہے ہیں اس نے کہا آئندہ نزدیک لیبیا میں بہت زیادہ افراد ہلاک ہونگے رمضان نے بحرین میں سعودی عرب کی فوجی مداخلت کو امریکی پالیسی کا حصہ قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ سب مسلمان جانتے ہیں کہ سعودی عرب علاقہ میں امریکہ کا سب سے بڑا اتحادی ملک ہے اور سعودی عرب اس وقت امریکی اشاروں پر ناچ رہا ہے۔

News Code 1277526

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 15 =