یمنی فوج کے اہم جنرل نے مظاہرین کی حمایت کا اعلان کردیا ہے

یمن کے ایک اہم جنرل علی محسن الاحمر نے حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرین کی حمایت کا اعلان کیا ہے ،علی محسن صدر علی عبداللہ صالح کے نزدیکی لوگوں میں شمار کیے جاتے تھے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزيرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ خبر ہے کہ یمن کے ایک اہم جنرل علی محسن الاحمر نے حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرین کی حمایت کا اعلان کیا ہے ،علی محسن صدر علی عبداللہ صالح کے نزدیکی لوگوں میں شمار کیے جاتے تھے۔جبکہ مزید دو فوجی کمانڈروں نے استعفٰی دیدیا ہے۔ جنرل علی محسن کا یہ اعلان صدر کی جانب سے اپنی حکومت کے خلاف مظاہروں کے ردِ عمل میں اپنی کابینہ کو برخاست کیے جانے کے بعد آیا۔دریں اثناء شمالی یمن میں لڑائی کے نتیجے میں بیس افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاع ہے۔ الجزیرہ ٹی وی پر نشر ہونے والے بیان میں جنرل محسن نے کہا کہ یمن کا یہ بحران اب شدید ہوتا جا رہا ہے جو ملک کو تشدد اور خانہ جنگی کی جانب دھکیل رہا ہے۔جنرل محسن نے کہا کہ میں جو محسوس کر رہا ہوں اور میرے ساتھی کمانڈر اور فوجی جو محسوس کر رہے ہیں اس کو مدِ نظر رکھتے ہوئے میں ملک میں نوجوانوں کے انقلاب کو اپنی اور اپنے ساتھیوں کی پرامن حمایت کا اعلان کرتا ہوں.انہوں نے مزید کہا کہ ہم ملک میں سکیورٹی اور استحکام قائم رکھنے کے اپنے فرض کو پورا کریں گے۔ادھر بعض ذرائع کے مطابق مختلف ممالک میں یمن کے کئی سفیروں نے بھی استعفی دیدیا ہے۔

News Code 1277320

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 1 =