قذافی اوراتحادی فوجوں کے حملوں میں لیبیا کے عام شہریوں کا قتل عام

لیبیا پر امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے حملوں میں عام شہریوں کا وسیع پیمانے پر جانی نقصان ہوا ہے اب تک 200 سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ لیبیا پر امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے حملوں میں عام شہریوں کا وسیع پیمانے پر جانی نقصان ہوا ہے اب تک 200 سے  زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔لیبیا پر اتحادی افواج کے تازہ حملوں میں معمر قذافی کی رہائش گاہ بھی تباہ ہو گئی،اطالوی فوجی اڈوں سے اڑنے والے جدید ترین جنگی جہازوں کی بم باری سے طرابلس شہر میں دھماکے سنے گئے ہیں۔امریکی فوج نے لیبیا پر حملوں کے بعد اس کے فضائی دفاعی نظام کو نقصان پہنچانے کا دعویٰ کیا ہے۔اتحادیوں نے لیبیائی فوج کے کئی ٹھکانے بھی تباہ کردئیے ہیں۔ طرابلس پر حملوں کے دوران قذافی کی ایک رہائشگاہ کی انتظامی عمارت بھی تباہ ہو گئی۔واشنگٹن میں وائس ایڈمرل بل گورٹنے نے کہا کہ حملوں کے بعد لیبیائی فوج کی فضائی نقل و حرکت نہیں دیکھی گئی۔ادھرپیرس میں فرانسیسی ترجمان نے کہا کہ فضائی حملوں کے دوران ان کے طیاروں کوکسی قسم کی مزاحمت کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔لیبیا کی فوج نے مخالفین کیخلاف جنگ بندی کا اعلان کیا ہے۔لیبیائی فوجی ترجمان کا کہنا تھا کہ تمام یونٹوں کو فوری طور پر انقلابیوں کیخلاف جنگ بندی کا حکم جاری کردیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق امریکہ اور اتحادی فوجوں کے حملوں میں عام شہریوں کا زبردست نقصان ہوا ہے امریکہ اور اس کے اتحادیوں نے لیبیا عوام کی حفاظت کی خاطر قذافی کے خلاف حملے نہیں کئے ہیں بلکہ لیبیا کے تیل پر قبضہ جمانے کے لئے حملے کئے گئے ہیں۔

News Code 1277143

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 12 =