جاپان میں زلزلے اور سونامی سے 20 ہزار سے زائد افراد اب تک ہلاک اور لاپتہ

جاپان میں11مارچ کے زلزلے اور سونامی کے بعدہلاک اور لاپتہ افراد کی تعداد بیس ہزارسے اوپر پہنچ گئی ہے۔

مہر خبرساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہجاپان میں11مارچ کے زلزلے اور سونامی کے بعدہلاک اور لاپتہ افراد کی تعداد بیس ہزارسے اوپر پہنچ گئی ہے۔ حکام نے آٹھ ہزار سے زائد افرادکی ہلاکت کی تصدیق کردی ہے جبکہ ہزاروں افرادلاپتہہیں۔ جنگ عظیم دوئم کے بعدجاپانی معیشت کوشدید نقصان پہنچاہے۔جاپانی پولیس نے خدشہ ظاہر کیاہے کہ صرف ایک علاقے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد15 ہزار ہوسکتی ہے۔جب کہ زلزلے اور سونامی کے نو دن بعدبھی نیوکلئیر پاور پلانٹ کے6 ری ایکٹرز کوٹھنڈا کرنے کے لیے3سوسے زائدانجینئرز مصروف عمل ہیں۔ انجینئرزنے امید ظاہر کی ہے کہ فیوکوشیما ایٹمی پاورپلانٹ کے چار ری ایکٹر کے کولنگ سسٹم کوبجلی کی بحالی کاکام آج مکمل کرلیا جائے گا ۔ ابتدائی اندازوں کے مطابق سونامی اورزلزلے سے جاپانی معیشت کو 2سوبلین ڈالر کا نقصان پہنچا ہے۔

News Code 1277004

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 7 =