بحرین میں سعودی و بحرینی سکیورٹی کی فائرنگ  سےبحرینی جوانوں کی درد ناک شہادت کی تصویریں

سعودی یہودیوں نے بحرین کے ڈکٹیٹر اور امریکہ نواز آل الخلیفہ کو بچانے اور بحرینی عوام کے پرامن مظاہروں کو کچلنے کے لئے اپنے سکیورٹی دستس بحرین روانہ کئے ہیں جنھوں نے بحرین میں عوام کا قتل عام شروع کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق سعودی یہودیوں نے بحرین کے ڈکٹیٹر اور امریکہ نواز آل الخلیفہ کو بچانے اور بحرینی عوام کے پرامن مظاہروں کو کچلنے کے لئے اپنے سکیورٹی دستے بحرین روانہ کئے ہیں جنھوں نے بحرین میں عوام کا قتل عام شروع کردیا ہے۔ مندرجہ ذیل تصویریں سعودی یہودیوں کی بربریت اور سفاکی کا واضح ثبوت ہیں بحرین میں سعودی مداخلت کی علاقائي اور عالمی سطح پر مذت کی جارہی ہے۔

تصاویر میں سعودی سکیورٹی دستوں نےبحرین کے 30 سالہ جوان احمد فرحان کے سر میں  گولی ماری  جسے ہسپتال میں منتقل کیا گيا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر شہید ہوگیا۔

بحرینی حکومت نے پرامن مظاہرین کو کچلنے کے لئے سعودی عرب اور امارات سے فوجی مدد طلب کی ہے یہ پہلی مرتبہ ہے کہ کوئی ملک اپنے عوام کے قتل عام کے لئے دوسرے ممالک کے سکیورٹی دستوں سے استفادہ کررہا ہے۔

 

بعض ذرائع کے مطابق سعودی یہودی سکیورٹی دستوں کو امریکی کمانڈروں کی سرپرستی حاصل ہے۔ اور بحرینی عوا م کا قتل عام سعودی امریکی مشترکہ پالیسی کا حصہ ہے کیونکہ امریکی وزیر خارجہ کے دورہ بحرین کے فوری بعد سعودی عرب نے اپنے فوجی دستے بحرین روانہ کئے ہیں  ذرائع کے مطابق سعودی یہودیوں نے جو کھیل شروع کیا ہے وہ ان کے لئے سخت مہنگا پڑے گا کیونکہ امریکہ اپنے دوستوں کو قربان کرنے سے دریغ نہیں کرتا ہے۔

امریکہ نے جو حشر اپنے قریبی دوستوں صدام معدوم ، بن علی اور حسنی مبارک کا کیا وہی حشر سعودی حکمرانوں کا بھی کرےگا ۔

 

سعودی حکام کو امریکہ کی تقلید اور مسلمانوں کے قتل عام سے باز رہنا چاہیے خادم الحرمین خائن الحرمین بن گئے ہیں  اور اسلام اور مسلمانوں کے خلاف امریکہ سے ملکر سازش کررہے ہیں سعودی خیانتکاروں کو مسلمان ہر گز معاف نہیں کریں گے۔

News Code 1275706

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 8 =