دو پاکستانی شہریوں کے قاتل امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس کو استثنی حاصل نہیں ہے

پاکستان کی وزارت خارجہ نے لاہور ہائی کورٹ میں لاہور میں دو پاکستانی شہریوں کے قاتل امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے سے منسلک امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس کے بارے میں ریکارڈ جمع کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاہور میں دو پاکستانی شہریوں کے قاتل امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس کو سفارتی استثنی حاصل نہیں ہے اور نہ ہی اس سلسلے میں کوئی ریکارڈ پاکستانی وزارت خارجہ میں موجود ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کی وزارت خارجہ نے لاہور ہائی کورٹ میں لاہور میں دو پاکستانی شہریوں کے قاتل امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے سے منسلک  امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس کے بارے میں ریکارڈ جمع کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاہور میں دو پاکستانی شہریوں کے قاتل امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس کو سفارتی استثنی حاصل نہیں ہے اور نہ ہی اس سلسلے میں کوئی ریکارڈ پاکستانی وزارت خارجہ میں موجود ہے۔ ادھر لاہور ہائی کورٹ نےکہا ہے کہ دو پاکستانی شہریوں کے قتل کے الزام میں گرفتار امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس کے استثنیٰ کا فیصلہ ٹرائل کورٹ کرے گی اور استثنیٰ کے حوالے سے دائر درخواستیں خارج کردیں۔ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت میں بیان دیا ہے کہ ریمنڈ ڈیوس کو امریکی حکومت کی درخواست پر آفیشل بزنس ویزہ دیا گیاہے۔

News Code 1274168

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 15 =