جاپان میں جوہری بجلی گھر میں دھماکہ// سونامی سے1000 سے زائد افرادہلاک

جاپان کے شمال مشرق میں آنے والے جاپانی تاریخ کےشدید ترین زلزلے کے بعد سونامی کی لہروں سے ہونے والی تباہی میں اب تک ایک ہزار سے زائد افراد کی ہلاکت اور سینکڑوں کے لاپتہ ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ادھر جاپان کے جوہری گھر میں دھماکہ ہوا جس سے تابکاری پھیکلانے کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ جاپان کے شمال مشرق میں آنے والے جاپانی تاریخ کےشدید ترین زلزلے کے بعد سونامی کی لہروں سے ہونے والی تباہی میں اب تک ایک ہزار سے زائد افراد کی ہلاکت اور سینکڑوں کے لاپتہ ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ادھر جاپان کے جوہری گھر میں دھماکہ ہوا جس سے تابکاری پھیکلانے کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔جاپان میں زلزلے سے متاثر ہونے والے ایک جوہری بجلی گھر میں دھماکہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوئے ہیں جبکہ فوکوشیما میں واقع اس بجلی گھر سے دھواں اٹھتا دیکھا گیا ہے۔

اس سے پہلے حکام نے شدید حدت کے نتیجے میں جوہری بجلی گھر کے ایندھن کے پگھل جانے کا خدشہ ظاہر کیا تھا۔

حکام کی جانب سے یہ بات اس بجلی گھر کے باہر تابکار مواد کی موجودگی کے بعد کہی گئی۔ جاپانی جوہری ایجنسی نے سنیچر کو کہا تھا کہ فوکوشیما1 پلانٹ کے قریب انہیں تابکار آئیوڈین اور کائسیم کے اثرات ملے ہیں۔

جاپانی جوہری ایجنسی کا کہنا ہے کہ اس طرح تابکار مواد کے ملنے کا مطلب یہ ہے کہ بجلی گھر کے ری ایکٹرز میں موجود یورینیم ایندھن کے کنٹینرز نے پگھلنا شروع کر دیا ہے۔

جاپانی ذرائع ابلاغ نے فوکوشیما دیچی بجلی گھر میں دھماکے اور وہاں سے دھوئیں کے اخراج کی خبریں دی ہیں۔ بجلی گھر کے حکام نے بجلی گھر میں دباؤ کم کرنے کے لیے کچھ تابکار بھاپ کو فضا میں بھی چھوڑا ہے۔

جاپان کے وزیراعظم ناتو کان نےپہلے ہی اس بجلی گھر کے پلانٹ نمبر ایک اور دو میں ہنگامی حالت نافذ کر دی تھی جبکہ انجینئرز یہ جاننے کی کوشش میں ہیں کہ کس ری ایکٹر کا ایندھن پگھل رہا ہے۔وزیراعظم نے تابکاری کے اخراج کے خطرے کے پیش نظر اس بجلی گھر کے قریب بسنے والے تین ہزار افراد کو فوری طور پر محفوظ مقامات پر منتقل کرنے کے احکامات بھی جاری کیے ہیں۔

News Code 1272530

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 2 =