امریکی فوج 2014 کے بعد بھی افغانستان میں موجود رہے گی

امریکہ کے وزیر دفاع رابرٹ گیٹس نے کہا ہے کہ امریکی فوج 2014 کے بعد بھی افغانستان میں موجود رہے گی ۔


مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہکے وزیر دفاع رابرٹ گیٹس نے کہا ہے کہ امریکی فوج 2014 کے بعد بھی افغانستان میں موجود رہے گی ۔

رابرٹ گیٹس کے مطابق اس معاملے میں کچھ مشکلات پیش آئیں گی جنہیں دور کر لیا جائے گا ۔امریکی وزیر دفاع دو روزہ دورے پر کل افغانستان پہنچے جہاں اس نے بگرام میں امریکی اڈے پر فوجی افسران سے بات کرتے ہوئےکہاکہ ان کے خیال میں افغان حکومت چاہتی ہے کہ دو ہزار چودہ کے بعد بھی افغانستان کو امریکی فوج کا تعاون حاصل رہے تاکہ افغان فورسز کی تربیت کا عمل جاری رہے ۔ امریکی وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ دو ہزار چودہ کے بعد افغانستان میں امریکی فوج کی موجودگی کے بارے میں افغان حکام سے بات چیت چل رہی ہے اور ان کے خیال میں افغان حکومت بھی امریکی اور نیٹو افواج کی افغانستان میں موجودگی کے حق میں ہے ۔ ادھر افغانستان کے صدر نے نیٹو افواج کے ہاتھوں عام افغان شہریوں کے قتل پر معافی مانگ لینے کو ناکافی قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ نیٹو فورسز کو عام افغان شہریوں کے قتل سے باز رہنا چاہیےمبصرین کا کہنا ہے خود امریکی طالبان کے نام پر افغانستان اور پاکستان میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث ہیں اور امریکی سی آئی اے کے طالبان کے ساتھ قریبی روابط ہیں اور طالبان و القاعدہ اور امریکہ ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں ۔

News Code 1269786

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 1 =