پاکستانی صدر نےوفاقی وزیر قانون کے خلاف مقدمہ کو سیاسی انتقامی کارروائی قراردیا ہے

پاکستان کےصدر آصف علی زرداری نے صوبہ پنجاب کی ایک عدالت میں وفاقی وزیر قانون بابر اعوان کے خلاف ڈکیتی اور اغوا کے الزامات کے تحت درج ایک پرانے مقدمے کی سماعت کو سیاسی انتقامی کارروائی قرار دیتے ہوئے اس کی سخت مذمت کی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کےصدر آصف علی زرداری نے صوبہ پنجاب کی ایک عدالت میں وفاقی وزیر قانون بابر اعوان کے خلاف ڈکیتی اور اغوا کے الزامات کے تحت درج ایک پرانے مقدمے کی سماعت کو سیاسی انتقامی کارروائی قرار دیتے ہوئے اس کی سخت مذمت کی ہے۔

 ایوان صدر کے ترجمان فرحت اللہ بابر کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق پاکستانی صدر نے راولپنڈی کی ایک عدالت کی جانب سے بابر اعوان کے خلاف فرد جرم عائد کیے جانے کو بدقسمتی قرار دیتے ہوئے اسے عدالتی نظام کو سیاسی مخالفین کے خلاف استعمال کرنے کی بدترین مثال قرار دیا۔واضح رہے کہ راولپنڈی کی ایک عدالت نے سنیچر کو وفاقی وزیر کے خلاف بارہ برس قبل درج مقدمے کی سماعت کے دوران ان پر فرد جرم عائد کرنے کی کارروائی کی تھی۔بابر اعوان نے عدالتی کارروائی کے دوران ان الزامات سے انکار کیا اور مقدمے کو سیاسی بنیادوں پر قرار دیا۔

پاکستان کے صدر نے پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین کی حیثیت سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ ایک طرف سیاسی کارروائی کی جاری ہے جبکہ دوسری طرف جمہوری روایات اور عدالتی آزادی کے حق میں بیانات دیئے جا رہے ہیں۔

News Code 1269098

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 1 =