لیبیاکے خونخوار صدر معمر قذافی کے خلاف پورے لیبیا کے عوام احتجاج بن گئے ہیں

لیبیاکے ڈکٹیٹر اور وحشی صدرکرنل معمرقذافی کے بیالیس سالہ اقتدار کے خاتمے کیلئے لڑائی ملک کے تمام حصوں میں پھیل گئی ہے مظاہرین قربانیاں دیکرطرابلس کی جانب بڑھ رہے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ لیبیاکے ڈکٹیٹر اور وحشی صدرکرنل معمرقذافی کے بیالیس سالہ اقتدار کے خاتمے کیلئے لڑائی ملک کے تمام حصوں میں پھیل گئی ہے مظاہرین قربانیاں دیکرطرابلس کی جانب بڑھ رہے ہیں۔ مظاہرینقذافی کے آبائی شہرسرت کا کنٹرول حاصل کرنے کیلئے بن جواد کے مقام پر دو بدو لڑائی میں مصروف ہیں ۔ بن جواد میں گھمسان کی لڑائی جاری ہے اور مظاہرین سرت شہر کی طرف پیشقدمی کررہے ہیں مظاہرین کی پیشقدمی کو روکنے کے لئے کرنل قذافی نے بمباری کا حکم دیا ہے اور قذافی کے حامی فوجی مظاہرین پر بمباری کررہے ہیں ۔مصراتہ میں قذافی کی فورسز ٹینکوں اور آرٹلری کی مدد سے چڑھائی کررہی ہیں ۔ راسلانوف شہر ، زاویہ اور بن غازی ابھی تک مظاہرین  کے کنٹرول میں ہے۔ مظاہرین کے حوصلے بلند ہیں اور وہ قذافی کو اقتدار سے ہٹانے کے لئے پختہ عزم کئے ہوئے ہیں ادھر قذافی کو اٹلی اور برطانیہ کی حمایت بھی حاصل ہے ۔عوام کے غیظ و غضب سے اب کوئی بھی قذافی کو نہیں بچا سکے گا۔

News Code 1269083

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 6 =