بحرین میں حکومت مخالف مظاہروں کا سلسلہ جاری

بحرین کے دارالحکومت منامہکا لؤ لؤ اسکوائر ایک مرتبہ پھر مظاہرین کے نعروں سے گونج اٹھامظاہرین کی صف تین کلو میٹر لمبی ہے بحرینی مظاہرین بادشاہی نظام کے خاتمہ کا مطالبہ کررہے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بحرین کے دارالحکومت منامہکا لؤ لؤ اسکوائر ایک مرتبہ پھر مظاہرین کے نعروں سے گونج اٹھامظاہرین کی صف تین کلو میٹر لمبی ہے بحرینی مظاہرین بادشاہی نظام کے خاتمہ کا مطالبہ کررہے ہیں۔ہفتے کی رات کوہزاروں افرادمارچ کرتے ہوئے لؤ لؤ اسکوائرپر جمع ہوئے۔ان میں بڑی تعداد میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے۔مظاہرین حکومت کے خاتمے کامطالبہ کررہے تھے۔عرب دنیا میں امریکہ اور اسرائیل نواز عرب حکمرانوں کے خلاف عوامی انقلاب کی لہر جاری ہے تیونس کے بعد مصر، اردن ، یمن، الجزائر ، بحرین اور سعودی عرب میں شدید مظاہرے ہوئے ہیں سعودی عرب نے مظاہروں پر پابندی عائد کردی ہے۔ جبکہ دیگر عرب ممالک میں مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے سعودی عرب عرب خطے میں امریکہ کا سب سے بڑا حامی ہے جس کی امریکہ کے ساتھ تجارت کا اسرائيل و بہت بڑا فائدہ پہنچتا ہے امریکہ سعودی عرب کے ذریعہ علاقائی انقلابات کو منحرف کرنے کی تلاش و کوشش کررہا ہے۔

News Code 1267904

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 8 =