ریمنڈ ڈیوس کے معاملے پر امریکہ پاکستان کوسزا دے سکتا ہے

برطانوی خبررساں ادارے رائٹر نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ اگر پاکستان کے ساتھ امریکی جاسوس اور قاتل شہری ریمنڈ ڈیوس کے معاملے کا حل جلد نہ کیا گياتو واشنگٹن سزا کے طور پر پاکستان کا نان و نفقہ بند اور اس کےخلاف سفارتی اور معاشی محاذ پر کارروائی کرسکتا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق برطانوی خبررساں ادارے رائٹر نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ اگر پاکستان کے ساتھ امریکی جاسوس اور قاتل شہری ریمنڈ ڈیوس کے معاملے کا حل جلد نہ ہوا تو واشنگٹن سزا کے طور پر پاکستان کا نان و نفقہ بند اور اس کےخلاف سفارتی اور معاشی محاذ پر کارروائی کرسکتا ہے۔حکام کے مطابق امریکہ بطور سزایو ایس ایڈ کے ذریعے پاکستان کو دی جانیوالی امداد اور پاکستانیوں کیلئے امریکی ویزوں کااجرا روک سکتا ہے۔اس کے ساتھ امریکہ میں بعض پاکستانی سفارتی اہلکاروں کو ناپسندیدہ قرار دیکر ملک بدر بھی کیا جاسکتاہے۔رائٹرز نے دو امریکی حکام کے حوالے سے بتایا کہ فی الحال کسی قسم کی پابندیاں نہیں لگائی جارہیں لیکن اگر معاملات درست حل نہ ہوئے تو پاکستان کو دباؤ میں لانے کیلئے اقدامات خارج از امکا ن نہیں ۔ امریکی قومی سلامتی کے حکام کا کہنا ہے کہ امریکا پاکستان میں قتل کے الزام میں گرفتار سی آئی اے اہلکار کی رہائی کی کوششیں کر رہا ہے۔حکام نے کہا کہ انہیں یقین ہے اسلام آباد اور واشنگٹن کے درمیان نجی گفتگو میں ریمنڈ ڈیوس کے واقعہ کے بعد پاکستان میں پیدا ہونے والے امریکہ مخالف جذبات کو ٹھنڈا کیا جائے گا۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ امریکہ پاکستان کے اندر عدم استحکام پیدا کرنے کے لئے خود کش حملوں میں ملوث ہے امریکہ پاکستان میں دہشت گردی کو فروغ دے رہا ہے اور ریمنڈ ڈیوس اس کا واضح اور منہ بولتا ثبوت ہے۔
News Code 1266557

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 1 =