لیبیا میں کرنل قذافی کے خلاف مظاہروں کا سلسلہ جاری

لیبیا کے ڈکٹیٹر اور خونخوار صدر معمر قذافی کے خلاف عوامی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے غیر سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک 6 ہزار سے زائد مظاہرین ہلاک ہوچکے ہیں لیبیائي عوام قذافی کے چالیس سالہ منحوس دور کا خاتمہ چاہتے ہیں عرب ممالک میں مغربی ممالک کی حمایت میں قائم ہونے والی حکومتوں کو اب شکست و ناکامی کا سامنا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق لیبیا کے ڈکٹیٹر اور خونخوار صدر معمر قذافی کے خلاف عوامی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے غیر سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک 6 ہزار سے زائد مظاہرین ہلاک ہوچکے ہیں لیبیائي عوام قذافی کے چالیس سالہ منحوس دور کا خاتمہ چاہتے ہیں عرب ممالک میں مغربی ممالک کی حمایت میں قائم ہونے والی حکومتوں کو اب شکست و ناکامی کا سامنا ہے۔ لیبیا کے علاقوں اجدابیا اوربریجا پر فوج کی بمباری کے بعد مختلف قبائلی علاقوں سے رضاکارمظاہرین کی مدد کو پہنچ رہے ہیں۔اسلحہ سے لیس رضاکارکرنل قذافی کے شرپسندوں سے لڑنے کے لیے تیارہیں امریکہ کے حامی ڈکٹیٹر اب اپنے ہی عوام پر بم گرا رہے ہیں اقتدار چھوڑنے کے بجائے عوام کو کچل رہے ہیں۔ لیبیا کے عوام نے ونزوئلا کے صدر ہوگو شاویز کی طرف سے ثالثی کی پیش کش کو بھی ٹھکرا دیا ہے لیبیا کے عوام خونخوار اور کرپٹ صدر سے نجات حاصل کرنے کا پختہ عزم کئے ہوئے ہیں۔ عوب ممالک میں امریکہ اور اسرائیل نواز حکام پر زبردست خوف و ہراس طاری ہے اور یہی وجہ ہے کہ اب امریکہ مکر و فریب کا سہارا لیتے ہوئے اپنی کروٹ بظاہر بدل لی ہے اوراپنے عرب ڈکٹیٹروں کی حمایت کے بجائے بظآہر عوام کی حمایت کی بات کررہا ہے لیکن یہ سب گجھ عرب عوام کی اسلامی انقلابی لہر کو منحرف کرنے اور اسرائیل کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے ہے مبصرین کا کہنا ہے کہ امریکہ اب اسرائیل کو عرب عوام کے غیض و غضب سے ہر گز نہیں بچا سکے گا۔
News Code 1266528

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 3 =