امریکی جنگی جہاز لیبیاکی سرحد کی طرف روانہ

دو امریکی جنگي جہاز بحیرہ روم میں داخل ہوں گےجو لیبیا کی جانب رواں دواں ہیں امریکہ فوجی طاقت کے ذریعہ عرب ممالک میں آنے والے عوامی انقلاب کو اغوا کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ دو امریکی جنگي جہاز بحیرہ روم میں داخل ہوں گےجو لیبیا کی جانب رواں دواں ہیں امریکہ فوجی طاقت کے ذریعہ عرب ممالک میں آنے والے عوامی انقلاب کو اغوا کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ امریکی جنگی جہازوں پردو ہزار سے زائد میرین سوارہیں ۔لیبیاجنگ کے دہانے پرپہنچ گیا ہے۔کئی شہروں پر باغیوں کاکنٹرول ہے۔جنھوں نے اپنی فوج بنا لی ہے اوروہ قذافی کی فوج سے لڑنے کے لیے تیارہیں۔بن غازی میں اب تک دوسوبیس افرادکی ہلاکت کی تصدیق ہوچکی ہے۔اورملک بھر میں دوہزارسے زائد افرادمارے جاچکے ہیں۔ امریکی وزیردفاع رابرٹ گیٹس نے فوجی سربراہ ایڈمرل مائیک مولن کے ساتھ واشنگٹن میں پریس کانفرنس میں کہاکہ لیبیا کی صورت حال کے متعلق مختلف امکانات پر غور کیا جارہا ہے تاہم اس کے خلاف کارروائی کے لیے اب تک نیٹو ممالک میں اتفاق نہیں ہوسکاہے جبکہ فرانس نے خبردارکیا ہے کہ لیبیا میں نیٹو کی مداخلت نقصان دہ ثابت ہوگی۔ امریکی وزیرخارجہ ہلیری کلنٹن نے ایوان نمائندگان کی خارجہ امورکمیٹی کوبتایا کہ لیبیا میں خطرہ انتہائی سطح پرہے۔ ذرائع کے مطابق خطے میں امریکی مداخلت سے حالات مزيد پیچیدہ ہوسکتے ہیں اور عرب ڈکٹیٹروں کے ساتھ امریکہ کو بھی عوام کےقہر و غضب کا سامنا کرنے پڑےگا۔

News Code 1265504

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 6 =