ہندوستان میں گودھرا کیس میں  11 مسلمانوں کو سزائے موت

ہندوستان میں گجرات کی ایک خصوصی عدالت نے گودھرا میں ٹرین جلانے کے واقعہ میں گیارہ مسلمانوں کو سزائے موت جبکہ بیس کو عمر قید کی سزا سنا دی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ہندوستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ہندوستان میں گجرات کی ایک خصوصی عدالت نے گودھرا میں ٹرین جلانے کے واقعہ میں گیارہ مسلمانوں کو سزائے موت جبکہ بیس کو عمر قید کی سزا سنا دی ہے۔ وکیل صفائی  آئی ایم منشی نے کہا ہے کہ عدالت کا فیصلہ نامناسب ہے اور وہ اس کے خلاف ہائی کورٹ میں اپیل کریں گے۔ فروری 2002 میں گودھرا میں ٹرین جلائے جانے کے واقعہ میں 59 افراد ہلاک ہو ئے تھے۔

احمدآباد کی سابرمتی جیل میں واقع اس خصوصی عدالت نے 22 فروری کو 63 ملزموں کو بے قصور قرار دیا تھا۔ یہ سبھی آٹھ برس سے زیادہ عرصے سے جیل میں تھے۔ استغاثہ نے سبھی 31 قصورواروں کو سزائے موت دینے کی درخواست کی تھی لیکن عدالت نے صرف انہیں قصورواروں کوموت کی سزا سنائی جنہوں نے حملے کی سازش میں اہم کردار ادا کیا تھا۔ موت کی سزا پانے والوں میں عبدالرزاق محمد کر کر، بلال اسماعیل، عبد الماجد سوجیلا عرف بلال حاجی، رمضانی بنیامین بیہرا، جابر بامین بیہرا، حسن احمد چرخا، محبوب خالد چاندا، سلمان یوسف ستار زردہ، سراج محمد، عرفان عبدالماجد گانچی قلندر، عرفان محمد حنیف عبد الغنی پٹالیا اور محبوب احمد یوسف حسن کے نام شامل ہیں۔

News Code 1264747

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 1 =