ملائیشیا کے سابق وزیراعظم مہاتیر محمدحکمراں جماعت سے الگ ہوگئے ہیں

ملائیشیا کے سابق وزیراعظم مہاتیر محمد نے سولہ برس کی طویل رفاقت کے بعد حکمران پارٹی سے علیحدہ ہونے کا اعلان کیا ہے۔

مہرخبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ملائیشیا کے سابق وزیراعظم مہاتیر محمد نے سولہ برس کی طویل رفاقت کے بعد حکمران پارٹی سے علیحدہ ہونے کا اعلان کیا ہے۔ مہاتیر محمد کے بیٹے موخزانی مہاتیر نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ مہاتیر محمد نے وزیراعظم بداوی کی ملک اور جماعت کی قیادت کی کارکردگی پر احتجاجاً یو ایم این او کی رکنیت سے استعفٰی دیا ہے۔ خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق اپنے استعفے پر مہاتیر محمد کا کہنا ہے کہ میں اسی وقت جماعت میں واپس آؤں گا جب قیادت میں تبدیلی لائی جائے گی‘۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ان کا استعفٰی وزیراعظم بداوی پر عدم اعتماد کا اظہار ہے۔ بائیس سال سے زائد عرصے تک ملائیشیا کے وزیراعظم رہنے والے ڈاکٹر مہاتیر محمد نے سنہ 2003 میں خود عبداللہ بداوی کو اپنا جانشین مقرر کیا تھا تاہم حالیہ مہینوں میں انہوں نے بداوی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

 

News Code 686094

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 1 =