سعودی عرب کا پردہ فاش/ ٹرمپ کو انتخابات میں رشوت کی بھاری رقم فراہم کی

امریکی ذرائع ابلاغ نے فاش کیا ہے کہ امریکہ کے صدارتی انتخابات کے دوران صدرڈونلڈ ٹرمپ نےسعودی عرب سے بھاری رقم رشوت کے طور پر وصول کی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ کے صدارتی انتخابات کے دوران صدرڈونلڈ ٹرمپ نےسعودی عرب سے بھاری رقم  رشوت کے عنوان سے وصول کی۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق سعودی عرب نے 11 ستمبر کے حملے کے سلسلے میں جاسٹا قانون ( دہشت گردوں کے معاونین کے خلاف انصاف کے اقدام) کی منظوری کو روکنے کے لئے بھاری مقدار میں رشوت فراہم کی ۔ تاکہ یہ قانون منظور نہ ہوسکے اور 11 ستمبر کے واقعہ کے متاثرین سعودی عرب سے دہشت گردوں کی حمایت کے جرم میں تاوان وصول نہ کرسکیں۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق 11 ستمر کے ہولناک واقعہ میں ملوث 19 دہشت گردوں میں سے 15 دہشت گردوں کا تعلق سعودی عرب سے تھا جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ سعودی عرب کی اعلی قیادت 11 ستمبر کے واقعہ میں براہ راست ملوث تھی ۔ لیکن سعودی عرب نے امریکہ کے اعلی فوجی حکام اور کانگریس میں اپنی حامی لابی کو بڑی مقدار میں رشوت فراہم کرکے 11 ستمبر کے واقعہ کو تاریخ سے محو کرنے کی ناپاک کوشش کی۔ واشنگٹن پوسٹ کے مطابق سعودی عرب کی حامی لابی میں سرفہرست ڈونلڈ ٹرمپ تھے جس نے امریکہ کے کہنہ مشق ریٹائرڈ فوجی افسروں کو تین مہینے تک اپنے ہوٹل میں قیام کی سہولت فراہم کی ۔ اور سعودی عرب کے حکام نے ڈونلڈ ٹرمپ کے ہوٹل کا خرچہ کئي ملین ڈالر میں ادا کیا  اور اس طرح سعودی عرب نے واشنگٹن میں اپنی لابی کو بھاری رشوت دیکر جاسٹا قانون کو منظور ہونے سے روک دیا۔ واشنگٹن پوسٹ کے مطابق امریکی ریٹائرڈ فوجی افسروں کا کہنا ہے انھیں نہیں معلوم کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے ہوٹل میں قیام کے دوران ان کا خرچہ کس نے ادا کیا اور وہ اس بارے میں تحقیقات کے حامی ہیں۔

News Code 1886237

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 11 =