امریکی صدر ٹرمپ کی صحافی کے ساتھ جھڑپ

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی وائٹ ہائوس میں انتخابی نتائج کے حوالے سے پریس کانفرنس کے دوران صحافی سے جھڑپ ہوئی اور صحافی کے وائٹ ہاؤس پر داخلے پر پابندی عائد کردی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے سی این این کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی وائٹ ہائوس میں انتخابی نتائج کے حوالے سے پریس کانفرنس کے دوران صحافی سے جھڑپ ہوئی اور صحافی کے وائٹ ہاؤس پر داخلے پر پابندی عائد کردی ہے۔

اطلاعات کے مطابق صدرٹرمپ  نے روسی مداخلت سے متعلق سوال پر سی این این کے صحافی کوعوام کا دشمن قرار دے دیا۔ وائٹ ہا ؤس میں عالمی نشریاتی ادارے سی این این کے رپورٹر جم اکوسٹا نے امریکی صدر سے روسی مداخلت کا سوال شروع ہی کیا تھا کہ امریکی صدر سیخ پا ہو گئے اور کہا کہ تم بدتمیز اور گھٹیا شخص ہو اور عوام کے دشمن بھی ہو۔امریکی صدر نے کہا میرے خیال میں مجھے ملک چلانے دیا جائے آپ سی این این چلائیں، یہی بہتر ہوگا۔

امریکی صدر نے سی این این کے رپورٹر کو بیٹھنے کا کہا لیکن رپورٹر نے اپنا سوال جاری رکھا جس پر ڈونلڈ ٹرمپ کو مزید طیش آگیا۔ڈونلڈ ٹر مپ نے قدرے غصے میں کہا کہ بس بہت ہوگیا، بس بہت ہوگیا، بیٹھ جائو۔تاہم جم اکوسٹا نے امریکی صدر کے غصے کو خاطر میں لائے بغیر اگلا سوال پوچھا کہ کیا آپ کو روسی مداخلت پر تشویش ہے۔جس پر ڈونلڈ ٹرمپ نے نہ چاہتے ہوئے جواب دیا کہ میں کسی روسی مداخلت کو نہیں مانتا، یہ سب افواہ ہے۔اسی دوران رپورٹر نے دوبارہ وضاحت چاہی تو ڈونلڈٹرمپ پھر طیش میں آگئے اور کہا بس بہت ہوگیا،بیٹھ جائو، مائیک بند کرو لیکن رپورٹر نے اپنا سوال جاری رکھا تو ڈونلڈٹرمپ پریس کانفرنس چھوڑ کر جانے لگے جس پر میزبان خاتون نے رپورٹر سے مائیکروفون لے لیا۔

ڈونلڈٹرمپ واپس روسٹرم پر آئے اور کہا کہ امریکی چینل کے لیے شرمناک ہے کہ تم جیسے رپورٹرز رکھے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ تم بہت بدتمیز شخص ہو تمہیں سی این این میں کام نہیں کرنا چاہیے۔امریکی صدر کے تضحیک آمیز جملے پر رپورٹر نے کھڑے ہو کر اپنی بات کرنی چاہی تو ڈونلڈٹرمپ نے مزید کہا تم غلط خبریں دیتے ہو تمہارا چینل چلتا ہے ، تم لوگوں کے دشمن ہو۔

News Code 1885452

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 5 =