آغا سید حسن کا شہدائے جموں کو خراج تحسین

ہندوستان کے زير انتظام کشمیر میں انجمن شرعی شیعیان کے صدر اور حریت رہنما آغا سید حسن موسوی نے پیغبمر اسلام حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی رحلت اور حضرت امام حسن مجتبی کی شہادت کی مناسبت سے ماگام کے علاقہ یوگی پورہ میں ایک اجتماع سے خطاب میں 6 نومبر 1947 کے شہدائے جموں کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق ہندوستان کے زير ناتظام کشمیر میں انجمن شرعی شیعیان کے صدر اور حریت رہنما آغا سید حسن موسوی نے پیغبمر اسلام حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی رحلت اور حضرت امام حسن مجتبی علیہ السلام  کی شہادت کی مناسبت سے ماگام کے علاقہ یوگی پورہ میں ایک اجتماع سے خطاب میں 6 نومبر 1947 کے شہدائے جموں کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔

آغا سید حسن نے ہزاروں افراد کے اجتماع سے خطاب میں آنحضور(ص) کی حیات طیبہ کے مختلف گوشوں اور ان کے اخلاق حسنہ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالی نے پیغمبر اسلام کو نبی رحمت بنا کربھیجا اور انھیں خلق عظیم پرفائز کیا ۔ انھوں نے صلح امام حسن کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ حضرت امام حسن علیہ السلام نے صلح کرکے امت کو انتشار سے بچانے کے علاوہ معاویہ کے مکروہ چہرے کو بھی دنیا کے سامنے  پیش کردیا۔ انھوں نے کہا کہ اگر معاویہ صلح کے شرائط کو پامال نہ کرتا تو واقعہ کربلا رونما نہ ہو تا لیکن معاویہ نے یزید جیسے اپنے فاسق و فاجر بیٹے کے لئے لوگوں سے بیعت لیکر اور اسے مسند خلافت پر بٹھا کر اسلام کے ساتھ بہت بڑی غداری اور خیانت کا ارتکاب کیا۔

News Code 1885415

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 9 =