امریکہ کی طیارہ بردار جنگی کشتیاں ایرانی میزائلوں کے نشانے پر ہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے ڈپٹی کمانڈر جنرل سلامی نے کہا ہے کہ خلیج فارس میں امریکہ کی طیارہ بردار جنگی کشتیاں ایرانی میزائلوں کے نشانے پر ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے ڈپٹی کمانڈر جنرل حسین سلامی نے ٹی وی پروگرام نگاہ یک کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ خلیج فارس میں امریکہ کی طیارہ بردار جنگی کشتیاں ایرانی میزائلوں کے نشانے پر ہیں۔

جنرل سلامی نے امریکہ کی نئی پابندیوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے پہلے ایران کے تیل کی فروخت کو صفر تک پنہچانے کا اعلان کیا جب اس کی بات عالمی سطح پر نہيں سنی گئی تو امریکہ نے اس بات کا اعتراف کیا ایران کے تیل کی فروخت کو صفر تک پہنچانا ممکن نہیں اور امریکہ نے مجبوری کی حالت میں ایران سے تیل خریدنے والے 8 ممالک کو استثنی دیدیا۔ جنرل سلامی نے کہا کہ امریکہ کا یہ اقدام ایران کی بہت بڑی کامیابی ہے جس پر ہمیں اللہ تعالی کا شکر ادا کرنا چاہیے کہ وہ ہمارے دشمن کو کس طرح ناکام بنا رہا ہے۔

جنرل سلامی نے کہا کہ امریکہ آج ایران کو الگ تھلگ کرنے کے بجائے دنیا میں خود الگ تھلگ ہوکر رہ گیا ہے آج کوئی بھی ملک ایران کے خلاف امریکی پابندیوں کی حمایت کرنے کے لئے تیار نہیں۔ جو اس بات کا مظہر ہے کہ امریکہ دنیا میں تنہا رہ گيا ہے۔

جنرل سلامی نے عراق میں اربعین کے عظیم پیدل مارچ کو اسلام کی عظمت ، طاقت اور قدرت کا مظہر قراردیتے ہوئے کہا کہ عاشورا کے وارث اسلام کی حفاظت کے لئے ہر قسم کی قربانی پیش کرنے کے لئے آمادہ ہیں۔ عاشور کا دن اسلام کی بقا اور تحفظ کا دن ہے اور عاشورا کے وارث اسلام کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے بالکل آمادہ ہیں۔ ہم ہر دور کے یزید کا مقابلہ کرنے کے لئے تیار ہیں۔

News Code 1885338

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =