امریکہ مذاکرات کے سلسلے میں قابل اعتماد نہیں/ ایران کو امریکہ سے کوئی دلچسپی نہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ امریکہ نے عالمی معاہدوں سے خارج ہوکر ثابت کردیا ہے کہ وہ مذاکرات کے سلسلے میں قابل اعتماد نہیں ہے اور ایران کو امریکہ کے ساتھ گفتگو کا کوئی شوق بھی نہیں ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے الجزیرہ انکریزی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نے عالمی معاہدوں سے خارج ہوکر ثابت کردیا ہے کہ وہ مذاکرات کے سلسلے میں قابل اعتماد نہیں ہے اور ایران کو امریکہ کے ساتھ گفتگو کا کوئی شوق بھی نہیں ہے۔ ایرانی وزير خارجہ نے سن 1955 کے مودت معاہدے سے امریکہ کے خارج ہونے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ ہمیشہ ایران کے ساتھ معاہدہ کرنے کی بات کرتا رہتا ہے حالانکہ امریکہ حال ہی میں ایران اور امریکہ کے ساتھ واحد معاہدے سے بھی خارج ہوگیا ہے کیونکہ عالمی عدالت نے اس معاہدے کی روشنی میں امریکہ کی ایران  پر اقتصادی پابندیوں کے خلاف حکم صادر کیا ، لہذا امریکہ نے معاہدہ توڑ دیا۔ امریکہ کے عمل سے ثابت ہوتا ہے کہ اس کے ساتھ مذاکرات کا کوئی فائدہ نہیں ، امریکہ اور اسرائیل صرف طاقت کی زبان سمجھتے ہیں۔ظریف نے کہا کہ ہم مشترکہ ایٹمی معاہدے پر باقی ہیں اور اگر دوسرے فریقوں نے اس پر عمل کیا تو ایران کا عمل بھی جاری رہےگا۔

News Code 1884548

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 1 =