روس کا ڈالر کے مقابلے ميں نئی کرنسی لانے کا اعلان/امریکی ڈالر میں لین دین ختم ہوسکتا ہے

روسی ڈوما کے اقتصادی کمیشن کے سربراہ نے اعلان کیا ہے کہ روس بریکس رکن ممالک کے ساتھ ملکر ڈالر کے مقابلےميں نئی کرنسی لانے کی کوشش کررہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق روسی ڈوما کے اقتصادی کمیشن کے سربراہ آناتولی اکساکوو  نے اعلان کیا ہے کہ روس بریکس رکن ممالک کے ساتھ ملکر ڈالر کے مقابلےميں نئی کرنسی لانے کی کوشش کررہا ہے۔ اسن ے کہا کہ امریکہ ڈالر کے ذریعہ دوسرے ممالک پر بے جا دباؤ قائم کرکے دوسرے ممالک میں عدم استحکام پیدا کرتا ہے جس کا مقابلہ بہت ضروری ہے اس نے کہا کہ بریکس تنظیم کے رکن ممالک ( روس،چین، ہند، برازیل اور جنوبی افریقہ) نئی کرنسی ایجاد کرکے امریکی ڈالر کا مقابلہ کرسکتے ہیں۔ اس نے کہا کہ اگر امیرکہ نے ڈالر کے سلسلے میں اپنی روش تبدیل نہ کی تو دنیا ڈالر میں اپنا لین دین ختم کرسکتی ہے روسی ڈوما کے اقتصادی کمیشن کے سربراہ نے کہا کہ آئندہ  5 برسوں میں نئی کرنسی ایجاد کی جاسکتی ہے۔

News Code 1883137

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =