افغان طالبان کی اپنے آقا امریکہ کو براہ راست مذاکرات کی دعوت

افغانستان میں طالبان دہشت گردوں کے سربراہ ملا ہیبت اللہ نے اپنے آقا امریکہ کو براہ راست مذاکرات کی دعوت دیدی ہے امریکہ اور سعودی عرب نے مشترکہ طور پر پاکستان میں طالبان کی داغ بیل ڈالی تھی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع ابلاغ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان میں  طالبان دہشت گردوں کے سربراہ ملا ہیبت اللہ نے اپنے آقا امریکہ کو براہ راست مذاکرات کی دعوت دیدی ہے امریکہ اور سعودی عرب نے مشترکہ طور پر پاکستان میں طالبان کی داغ بیل ڈالی تھی۔ بعد میں آقا اور غلاموں کے مابین اختلاف پیدا ہوگئے۔ افغان ذرائع کے مطابق عید سے قبل جاری اپنے ایک پیغام میں طالبان سربراہ نے کہا ہے کہ افغان مسئلے کا حل غیر ملکی افواج کا انخلا ہے۔ملاہیبت اللہ نے مزید کہا کہ اگر امریکی حکام افغان مسئلے کا حقیقی حل چاہتے ہیں تو انہیں براہ راست مذاکرات کی میزپر آنا چاہیےتاکہ جنگ کی تباہ کاریوں سے بات چیت کے ذریعے بچا جا سکے۔ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ امریکی حکام کی سب سے بڑی بھول یہی ہے کہ وہ ہر مسئلے کا حل ہٹ دھرمی سے چاہتے ہیں، لیکن طاقت ہی ہر مسئلے کا حل نہیں ہوتی۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق خطے میں امریکی جارحیت ميں سعودی عرب کا بھر پور تعاون شامل ہے اور خطے میں امریکہ کے تمام جنگی اخراجات سعودی عرب ادا کررہا ہے۔

News Code 1881396

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 11 =