ایرانی قوم کے پختہ اور فولادی عزم پر پٹاخوں سے کوئي اثر نہیں پڑےگا

خبر آئی ڈی: 3998793 -
رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے طلباء سے ملاقات میں ایرانی پارلیمنٹ اور حضرت امام خمینی (رہ) کے حرم مبارک پر دہشت گردوں کے بزدلانہ حملے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: ایرانی قوم کے پختہ اور فولادی عزم پر دہشت گردوں کے پٹاخوں سےکوئی اثر نہیں پڑےگا۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای سے ایران کے علمی و تحقیقاتی اداروں  اور یونیورسٹیوں کے بعض طلباء نے تین گھنٹے تک ملاقات کی ۔ اس ملاقات میں طلباء نے ملک کے مختلف سیاسی ، اقتصادی ، ثقافتی اور سماجی شعبوں کے بارے میں اپنے اپنے نظریات اور خیالات  پیش کئے ۔  رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے طلباء کے نظریات اور خیالات سننے کے بعد طلباء کو سامراجی نظام کے خلاف جنگ میں فرنٹ لائن کے سپاہی قراردیتے ہوئےفرمایا: سامراجی نظام کے خلاف جنگ میں  طلباء کا اہم کردار ہے اور طلباء علم و دانش کے ذریعہ دشمن کی تمام سازشوں کو ناکام بناسکتے ہیں کیونکہ یونیورسٹی علم و دانش کا بنیادی رکن ہے۔رہبر معظم انقلاب اسلامی نے ایرانی پارلیمنٹ اور حضرت امام خمینی (رہ) کے حرم مبارک پر دہشت گردوں کے بزدلانہ اور ناکام حملے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: دہشت گردوں کے پٹاخوں سے ایرانی قوم کے پختہ اور فولادی عزم پر کوئی اثر نہیں پڑےگا۔ اس قسم کے واقعات سے ایرانی قوم اور ایرانی حکام کے عزم مصمم میں کوئی خلل واقع نہیں ہوگا۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے سامراجی اور بڑی طاقتوں کے مقابلے میں اسلامی نظام کے واضح مؤقف اور اعلان کو بہت ہی اہم اور تاریخی واقعہ قراردیتے ہوئےفرمایا:  اسلامی نظام کی سامراجی طاقتوں کے خلاف استقامت اور پائداری اس کے مؤثر اور مفید ہونے کا مظہر ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے  ایران میں اسلامی نظام کے بر سر اقتدار آنے کے بعد ملک کی علمی پیشرفت اور ترقی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: اسلامی نظام نے ایرانی قوم کو خوداعتمادی ، استقلال ، آزادی ، استقامت اور پائداری کا جذبہ عطا کیا اور آج ایرانی قوم اسلامی نظام کی بدولت سیاسی ، اقتصادی اور فوجی میدانوں میں اپنے  پاؤں پر کھڑی ہے اور دشمن کی تمام سازشوں کو ہمت اور جرائت کے ساتھ ناکام بنا رہی ہے لہذا ایران کے مؤمن ، غیور اور بہادر جوانوں کو ملک کی اس علمی پیشرفت اور ترقی کو فراموش نہیں کرنا چاہیے۔ رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فرمایا: ہمیں علمی میدان میں آگے کی سمت گامزن رہنا چاہیے اور اس مقام تک پہنچنا چاہیے جو اسلام اور ایرانی قوم کے شایان شان ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے یونیسکو کی قرارداد 2030 کو مردود قراردیتے ہوئے فرمایا: غیر ملکی اداروں اور عالمی سامراجی طاقتوں کے زیر نظر اداروں کو ایران کے تعلیمی نظام کو مرتب کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فرمایا: یہاں ایران ہے  ایرانی قوم کے پاس اسلامی ثقافت کا عظیم اور بہت بڑا ذخیرہ ہے  لہذا اقوام متحدہ یا یونیسکو میں ہمارا تعلیمی نصاب کوئی کیوں مرتب کرے؟

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے طلباء کو ایمان اور دینداری کی سفارش کرتے ہوئے فرمایا: طلباء کو چاہیے کہ وہ شرعی احکام اور الہی وظائف پر عمل کریں اور اپنا رابطہ اللہ تعالی سے مضبوط اور مستحکم بنانے کی تلاش اور جد وجہد کریں۔

تبصرہ ارسال

5 + 9 =